مئی 10, 2009

ماں تجھے سلام

Posted in Events, mother day, Special Days, یوم مادر tagged , , , , , , بوقت: 8:36 شام از Bilal

آج "یوم مادر” کی مناسبت سے، ہر خوش نصیب اپنے انداز میں، اپنی اپنی زبان میں (کہتے ہیں کہ پیار کی تو ایک ہی زبان ہے!! )، اپنی محبوب ترین ہستی کو خراج تحسین پیش کر نے کی کوشش کر رہا ہے، کیونکہ اس کا حق تو کبھی ادا ہی نہیں کیا جا سکتا، صرف کوشش ہی کی جا سکتی ہے۔

اس بحث کو کسی دوسری نشست کے لیئے چھوڑتے ہیں کہ آیا ہم اپنی مادر سے اظہار محبت کے لیئے مخصوص دن کے محتاج ہیں؟

ماں کے بارے میں بہت کچھ کہا جاچکا ہے، اور یہ سلسلہ جاری و ساری رہے گا۔ لفظ "ماں” سنتے ہی ذہن میں ایک ایسی ہستی کا خیال آتا ہے جس کی  آغوش میں انسان کو دنیا بھر کے مصائب اور آلام سے پناہ ملتی ہے۔ جہاں پہنچ کر انسان کو سکھ اور راحت ملتی ہے، وہ اپنے تمام دکھ بھول جاتا ہے۔

کہا جاتا ہے کہ ماں سب کی سانجھی ہوتی ہے۔ خوش نصیب ہیں وہ جنہیں ماں جیسی نعمت میسر ہے۔ وہ جہاں کہیں بھی ہوں، تنہا نہیں ہوں گے، ماں کی دعاہیں ہر وقت ان کو حصار میں لیئے ہونگی۔

انسان جتنا بھی بڑا ہو جائے، اپنے والدین (اور اساتذہ) کے لیئے وہ بچہ ہی رہتا ہے۔ آج کے دن کی مناسبت سے میں اپنی والدہ کے حضور گزارش کرتا ہوں کہ اگر میں نے دانستہ یہ نادانستہ کوئی غلطی کی ہو، کوئی گستاخی کرنے کی جسارت کی ہو یا کوئی ایسی بات کہی ہو جو آپ کے مرتبے کے منافی ہو، تو  میں ایک بار پھر دست بستہ معافی کا طلب گار ہوں۔ میری دعا ہے کہ اللہ رب العزت آپ کو بابرکت طول عمر عطا فرمائے اور ہمیں آپ کی خدمت کرتے رہنے کا شرف عطا فرمائے۔ آمین۔

آج میں ایک اور ہستی کی کمی بہت شدت سے محسوس کر رہا ہوں اور وہ ہیں میری دادی اماں۔ میں تفصیل میں نہیں جائوں گا، صرف اتنا ہی کہنا کافہ ہو گا کہ گھر والے مجھے "دادی دا پُتر” کہتے تھے۔ گزشتہ سال وہ ہم سب کو داغ مفارقت دے کر دارِ فانی سے دارِ بقا کی جانب کوچ کر گئیں۔ باری تعالی ان کے درجات بلند فرمائے اور جنت الفردوس میں ان کا مسکن کرار دے۔ آمین ثم آمین۔

آج کی نشست کا اختتام میں مرزا ادیب کے اقتباس سے کروں گا۔ اقتباس

Advertisements

تعارفی سلام

Posted in General tagged , بوقت: 7:47 شام از Bilal

راہ حق کے پیروکاروں کو سلام پہنچے۔

اردو بلاگ گا ارادہ کافی عرصے(2،3 سالوں) سے تھا، آخر کار آج یوم مادر کی مناسبت سے، یہ بلاگ معرض وجود میں آ ہی گیا۔

باقی تفاصیل کسی آئندہ نشست میں۔

یار زندہ، صحبت باقی۔