اکتوبر 14, 2009

اغوا برائے تاوان

Posted in کرائم سیل, خصوصی رپورٹ tagged , , بوقت: 9:28 صبح از Bilal

(خصوصی رپورٹ – کرائم سیل ) تازہ ترین اطلاعات کے مطابق پنجاب کے بیشتر علاقوں میں امن و امان کی صورتحال کافی مخدوش ہے۔ مختلف علاقوں میں دھمکیوں اور اغوا برائے تاوان کا سلسلہ جاری ہے ۔ خوش اخلاق و خوش رو اور بر سر روزگار انجینئرز ملزمان کا خاص شکار بن رہے ہیں۔

ملتان سے تعلق رکھنے والے ایک شخص مسمی علی عباس خواجہ عرف (CR)  کو مورخہ 28 ستمبر 2009 کو اغوا کر لیا گیا تھا۔ دھمکیوں کا سلسلہ تو کافی عرصہ سے جاری تھا اور حساس اداروں نے علی کو محتاط رہنے کا کہا تھا۔

اسی طرح لاہور سے تعلق رکھنے والے ایک شخص فہد شکیل عرف شیخ صاحب کو مورخہ 10 اکتوبر 2009 کو اغوا کر لیا گیا ہے۔ تقریبا ایک سال سے دھمکیوں کا سلسلہ جاری تھا۔

 "ملزمان" کی شرائط کافی سخت ہیں۔ دونوں اشخاص کیلئے تاوان عمر بھر شریک حیات کی خدمت کا مطالبہ ہے۔ تاوان کی ادائیگی کے باوجود رہائی کی بالکل امید نہیں ہے۔

یاد رہے کہ فیصل آباد سے تعلق رکھنے والے ایک شخص مسمی اسد علی عرف سندھو کو ماہ رمضان سے دھمکیوں کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ حساس ادارے کےمطابق اسد کو مستقبل قریب میں اغوا کر لیا جائے گا۔

وسیع تر مفاد عامہ کے لیئے  ہوشیار کیا جاتا ہے کہ آج کل حالات کافی زیادہ خراب ہو گئے ہیں۔ ۔مستقبل میں اس طرح کی مزید وارداتوں کا امکان ہے۔  اس لئے اپنی حفاظت کیلئے "حکومت" پر بھروسہ کرنے کی بجائے کوئی عملی کوشش کیجئے۔

Advertisements